سعودی عرب کا سب سے کم عمر ترین بچہ جو باپ بن گیا

جمبو ٹپس (نیوز ڈیسک ) سعودی عرب میں آج کل سوشل میڈیا پر ایک نئی بحث چھڑی ہوئی ہے۔اس بحث کا مرکز ایک سعودی لڑکا ہے جو پہلے تو  کم عمر ترین دولہا بنا اور اب باپ  بن گیا ہے۔ ڈیڑھ سال قبل علی القیسی کی شادی ہوئی۔شادی کے وقت اس کی عمر سولہ سال تھی اور علی اس وقت سکول میں آٹھویں جماعت کا طالب علم تھا۔علی کا تعلق سعودی عرب کے شہر تبوک سے ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق علی سعودی عرب کا کم عمر ترین لڑکا ہے جو پہلے دلہا بنا اور اب باپ بن چکا ہے ۔ ڈیڑھ سال قبل جب علی کی شادی ہوئی تو علی کی عمر محض 16 برس تھی۔
علی کی شادی اس کی چچا کی بیٹی سے ہوئی جو اس سے بھی ایک سال چھوٹی تھی۔اس شادی نے سعودی عرب میں ایک نئی بحث چھیڑ دی۔کچھ لوگ اس شادی کے حق میں اور کچھ لوگ مخالفت میں اپنی رائے دے رہے تھے۔

لیکن اب جب علی ایک بچے کا باپ بن چکا ہے تو تمام حلقوں کی طرف سے علی کو مبارک باد دی جا رہی ہے۔اور ہماری دعا  ہے کہ اللہ علی کی فیملی کو بہت ساری خوشیاں عطا فرمائے۔آمین۔
اگر آپ کو یہ تحریر پسند آئی ہے تو اسے فیس بک پر اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کیجیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں